بولی لگانے والوں کو غلط فہمی، عام سا گلدان اربوں روپے میں فروخت -

بولی لگانے والوں کو غلط فہمی، عام سا گلدان اربوں روپے میں فروخت –

Read Time:1 Minute, 46 Second


فرانس میں 2 ہزار ڈالر مالیت کا ایک عام سا گلدان نیلامی میں 75 لاکھ ڈالرز کا فروخت ہوگیا، بولی لگانے والوں نے گلدان کو اٹھارویں صدی کے نوادرات میں شامل سمجھ لیا تھا۔

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق فرانس سے باہر رہنے والی ایک خاتون نے یہ گلدان نیلامی سینٹر کو دیا تھا، خاتون نے اسے خود بھی نہیں دیکھا تھا اور فرانس کے خود مختار علاقے برٹنی میں قیام پذیر اپنی والدہ کے انتقال کے بعد ان کے سامان کو نیلامی سینٹر بھجوا دیا تھا۔

خاتون کا کہنا تھا کہ ان کی والدہ نوادرات جمع کرنے کی شوقین تھیں، ان کے انتقال کے بعد انہوں نے آن لائن نیلامی سینٹر سے رابطہ کیا اور والدہ کے گھر سے تمام نوادرات اٹھوا کر، ان کی جانچ پڑتال کر کے انہیں نیلام کرنے کی درخواست کی تھی۔

ان نوادارت میں مذکورہ گلدان بھی شامل تھا، نیلے نقش و نگار کا حامل یہ گلدان چین سے خریدا گیا تھا۔

نیلام گھر کی جانب سے اسے اٹھارویں صدی کا قیمتی تاریخی گلدان سمجھا گیا، بعد ازاں نیلامی میں اس پر لگائے جانے والی بولی بڑھتی گئی اور بالآخر یہ 7.59 ملین ڈالر (ڈیڑھ ارب سے بھی زائد پاکستانی روپے) میں فروخت ہوگیا۔

اس کی اصل قیمت 2 ہزار ڈالرز (لگ بھگ ساڑھے 4 لاکھ پاکستانی روپے) تھی اور یہ اپنی اصل قیمت سے 4 ہزار گنا زائد پر فروخت ہوا۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر یہ گلدان 200 سال قدیم ہوا تو یہ واقعی ایک اہم نایاب شے ہوسکتی تھی۔

Comments





Source link

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %

Average Rating

5 Star
0%
4 Star
0%
3 Star
0%
2 Star
0%
1 Star
0%

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *