بلوں میں کے ایم سی ٹیکس؛ کراچی والے سندھ حکومت پر پھٹ پڑے

بلوں میں کے ایم سی ٹیکس؛ کراچی والے سندھ حکومت پر پھٹ پڑے

Read Time:1 Minute, 31 Second


کراچی: کے الیکٹرک کے بلوں میں کے ایم سی کا ٹیکس لینے پر شہری سندھ حکومت پر پھٹ پڑے اور اسے ظلم قرار دے دیا۔

رپورٹ کے مطابق کے الیکٹرک اور کے ایم سی کے مابین ٹیکس وصولی کا معاہدہ طے پا گیا ہے جس کے تحت بجلی کے بلوں میں کے ایم سی چارجز وصول کیے جا رہے ہیں۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ یہ ٹیکس نہیں ظلم ہے، حکومت خود بھی کچھ کرے، اتنی مہنگائی میں یہ ٹیکس کراچی والوں کے لیے ناانصافی ہے، آدھے شہر کی سڑکیں ٹوٹی پڑی ہیں اور کہیں سے کچرا نہیں اٹھاتے، کس سے اپیل کریں۔

معاہدے کے مطابق 200 یونٹ استعمال پر 50 روپے اور 200 سے 700 یونٹ پر 150 روپے میونسپل ٹیکس عائد ہوگا۔ 700 سے زائد یونٹ استعمال کرنے والوں کو 200 روپے ماہانہ ٹیکس دینا ہوگا۔

کمرشل اور انڈسٹریل صارفین کو ماہانہ 200 روپے میونسپل ٹیکس کی صورت میں دینا ہوگا۔ ایک گھر میں ایک سے زائد میٹروں پر بھی ٹیکس وصول کیا جائے گا۔

شہر کے مجموعی طور پر 24 لاکھ صارفین سے میونسپل ٹیکس وصول کیا جائے گا۔

Comments





Source link

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %

Average Rating

5 Star
0%
4 Star
0%
3 Star
0%
2 Star
0%
1 Star
0%

Leave a Reply

Your email address will not be published.