ریستوران میں‌ عورت کا قتل کس نے کیا؟ brain teaser for testing your iq

ریستوران میں‌ عورت کا قتل کس نے کیا؟ brain teaser for testing your iq

Read Time:2 Minute, 24 Second


یہ تصویر پہیلی جاسوس بننے کے آپ کے پرانے شوق کو پورا کر سکتی ہے، اگر آپ نے 15 سیکنڈ میں قاتل کو پہچان لیا تو اس سے آپ کے آئی کیو لیول کا پتا چلے گا۔

اس بار آپ کو تصویر میں موجود ریستوران میں خاتون کے قاتل ہونے کے شبہے میں پانچ افراد میں سے قاتل کی شناخت کرنی ہے۔

تصویر کو غور سے دیکھیں، کیوں کہ آپ کو ان پانچ افراد میں سے ان کے حرکات و سکنات اور تاثرات کی بنیاد پر فیصلہ کرنا ہوگا، کہ قاتل کون ہے۔

سب سے پہلے ہم آپ کو بتائیں کہ اس پہیلی میں کہا گیا ہے کہ ایک عورت کو ایک ریستوران کے بیت الخلا میں قتل کیا گیا ہے، اور ریسٹورنٹ میں 5 مشتبہ افراد موجود ہیں۔

مشتبہ نمبر 1: نیلی قمیض میں ملبوس شخص، جو ریستوران کے دائیں طرف کی میز پر بیٹھا ہے۔

مشتبہ نمبر 2: جامنی رنگ کی قمیض میں ملبوس شخص، جو ریستوران کے سب سے درمیانی میز پر بیٹھا ہے۔

مشتبہ نمبر 3: گلابی لباس میں ملبوس خاتون، جو ریستوران کے دائیں کونے کی میز پر بیٹھی ہے۔

مشتبہ نمبر 4: سبز مائل رنگ کی قمیض میں ملبوس شخص، جو واش روم کے قریب بیٹھا ہے۔

مشتبہ نمبر 5: ویٹر جو ریسٹورنٹ میں مشروبات اور کھانا پیش کر رہا ہے۔

اگر آپ نے تصویر پر غور کر کے جواب ڈھونڈ لیا ہے تو ٹھیک، ورنہ نیچے اسکرول کریں:

اگر آپ تصویر میں موجود پانچ مشتبہ افراد کو غور سے دیکھیں تو آپ قاتل کی شناخت کر سکتے ہیں، یہ بھی ذہن میں رکھیں کہ قاتل ریستوران کے اندر موجود ہے:

مشتبہ نمبر 4 کو غور سے دیکھیں تو بہت سے ایسے سراغ مل رہے ہیں جو اس بات کی نشان دہی کر رہے ہیں کہ وہ واش روم میں موجود خاتون کا قاتل ہے۔

سراغ یہ ہیں:

وہ بہت پریشان لگ رہا ہے۔

وہ بیت الخلا کے قریب ہے۔

اس کا چاقو غائب ہے۔

اس کی شرٹ نیچے سے پھٹی ہوئی ہے۔

اس کی قمیض کا ایک ٹکڑا مقتولہ کی مٹھی میں پھنسا ہوا ہے۔

اس کی گردن پر خراش ہے۔

تو اس تصویر پہیلی کا جواب یہ ہے کہ ملزم نمبر 4 نے خاتون کو ریسٹورنٹ کے واش روم میں قتل کیا ہے۔

Comments





Source link

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %

Average Rating

5 Star
0%
4 Star
0%
3 Star
0%
2 Star
0%
1 Star
0%

Leave a Reply

Your email address will not be published.